news-details
کراچی

سندھ کے عوا م کے ساتھ ظلم ہو رہا ہے، 14 سال سے اس صوبے کو ڈاکو چلا رہے ہیں:اسد عمر

کراچی:(اتوار 30 جنوري 2022ع) وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا ہے کہ سندھ کے عوا م کے ساتھ ظلم ہو رہا ہے، 14 سال سے اس صوبے کو ڈاکو چلا رہے ہیں، اور عوام کو ان کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے۔
وفاقی وزیر پورٹ اینڈ شپنگ علی زیدی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا تھا کہ سندھ کےعوام بڑی تکلیف سے گزر رہے ہیں، سندھ حکومت نے نوجوانوں کی امید ختم کردی ہے، یہاں کہیں کسی کو نوکری نہیں ملتی اور اگر ملے تو پرچی پر نوکریاں ملتی ہیں، چھوٹے کاشتکاروں کو پانی کے لیے ترسا دیا ہے، 14 سال سے اس صوبے کو ڈاکو چلارہے ہیں، عوام کو ڈاکو راج پر چھوڑ دیا گیا ہے، عمران خان کی ہدایات ہیں کہ سندھ میں ہر صورت ڈاکو راج کا خاتمہ کیا جائے۔
وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ سندھ کے عوام کو دیکھ کر تکلیف ہوتی ہے، صحت ایک بنیادی ضرورت ہے جس کے لیے کے پی کے اور پنجاب نے کام کرلیا ہے، اس کارڈ کے ذریعے عوام کے علاج کی ذمہ داری ریاست لے رہی ہے، لیکن سندھ حکومت اس پر کچھ کرنے کے لیے تیار نہیں، صوبے میں بلدیاتی قانون 140 اے کی روح سے متصادم ہے، انہوں نے ترمیم کر کے بچا کچھا بھی تباہ کردیا ہے، ہمیں سندھ کے عوام کو ڈاکو راج سے نجات دلوا کر انہیں بنیادی حقوق فراہم کرنے ہیں، ہم پہلے بھی کہہ چکے ہیں کہ 2023 میں سندھ میں پی ٹی آئی کی حکومت بننے جارہی ہے، بہت ہی مربوط طریقے سے تنظیم پر کام شروع ہو چکا ہے۔
وفاقی وزیر پورٹ اینڈ شپنگ علی زیدی کا کہنا تھا کہ سندھ میں سیاسی نہیں مافیا حکومت کررہی ہے، صوبے میں زرداری مافیا گاڈ فادر بن کر بیٹھ گیا ہے اور یہ مافیالوٹ مار کر رہا ہے، آصف زرداری نے ایک منشی کو وزیراعلیٰ بنادیا ہے، وزیراعلی ہاؤس کے سامنے احتجاج کرنے والوں کے ساتھ جو کیا گیا وہ پتہ لگ چکا ہے، سندھ حکومت کے کسی کمیٹی میں اپوزیشن کےکسی ممبر کو شامل نہیں کیا گیا۔