news-details

شھباز گل کی گرفتاری کے بعد عمران خان کا ردعمل

اسلام آباد (آن لائن انڈس، 09آگست، منگل، 2022) پی ٹی آئی کے رہنما شہباز گل کو آج وفاقی دارالحکومت اسلام آباد سے گرفتار کر لیا گیا ہے۔ اسلام آباد پولیس کے اس عمل کی تصدیق تحریک انصاف کے کئے رہنما اور پولیس ذرائع کرچکے ہیں۔

تحریک انصاف کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر مراد سعید نے ٹوئٹر بیان میں تصدیق کی ہے کہ شہباز گل کو گرفتار کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ شہباز گل کی گاڑی پر حملہ کیا گیا، اس دوران ان کے اسسٹنٹ پر تشدد بھی کیاگیا ہے۔

مراد سعید نے مزید لکھا ہے کہ کس کس کو گرفتار کروگے؟ کتنے صحافیوں پر پابندی لگاؤ گے؟ شہباز گل کی گاڑی کے شیشے بھی توڑ دیے گئے۔ انہوں نے کہا کہ کل رات ایک خوفناک پلان تھا لیکن عمران خان کے جانثاروں نے واضح پیغام دیا ، عمران خان ریڈ لائن ہے۔

دوسری جانب چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے ٹوئٹر پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ شھباز گل کو گرفتار نہیں، اغوا کیا گیا ہے۔ انہوں نے لکھا کہ یہ اغوا ہے گرفتاری نہیں۔ کیا ایسی شرمناک حرکتیں کسی جمہوریت میں ہو سکتی ہیں؟ سیاسی کارکنوں کے ساتھ دشمنوں جیسا سلوک کیا جا رہا ہے اور یہ سب ہتھکنڈے بیرونی سازش سے آنے والی حکومت قبول کرنے کے لیے کیے جا رہے ہیں۔

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے ٹوئٹ میں کہا کہ شہباز گل کی گرفتاری کی پرزور مذمت کرتا ہوں۔ بغیر مقدمہ درج کیے اور بغیر نمبر کی گاڑیوں سے اغوا کرنا، اس سے سیاست میں مزید بےامنی پھیلے گی۔ پی ٹی آئی رہنما اور سابق وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے ٹوئٹر بیان میں کہا ہے کہ شہباز گل کو بنی گالہ چوک سے بغیر نمبر پلیٹ گاڑیوں میں آئے لوگوں نے اغوا کیا ہے۔

پولیس کے مطابق شہباز گل کو اسلام آباد پولیس نے حراست میں لیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ شہباز گل پرریاستی اداروں کے بارے میں نامناسب الفاظ استعمال کرنے کا الزام ہے ۔ شہباز گل سے اس وقت ایس پی رورل کے دفتر میں تفتیش کی جارہی ہے۔