نقیب اللہ قتل کیس: 6 سال سے مفرور سب انسپکٹر، شوٹر سمیت 7 ملزمان نےعدالت میں سرنڈر کر دیا

news-details

کراچی: (پیر: 22 مئی 2023ء) نقیب اللہ قتل کیس میں 6 سال سے مفرور سب انسپکٹر امان اللہ مروت، شعیب شوٹر سمیت 7 ملزمان نے عدالت میں سرنڈر کر دیا۔انسداد دہشتگردی کی منتظم عدالت نے امان اللہ مروت، شیخ محمد شعیب عرف شوٹر سمیت دیگر کی درخواست ضمانت خصوصی عدالت نمبر 16 کو منتقل کردی۔

کراچی کی انسداد دہشت گردی کی عدالت میں نقیب اللہ قتل کیس کی سماعت ہوئی، ملزم سندھ ہائیکورٹ سے حفاظتی ضمانت کے بعد انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش ہوئے۔ سب انسپکٹرامان اللہ مروت اور شعیب شوٹر سمیت 7 ملزمان نے عدالت میں سرنڈر کر دیا۔

ملزمان مقدمے میں طویل عرصے سے مفرور تھے، ملزموں کو انسداد دہشت گردی عدالت نے اشتہاری قرار دیا تھا۔ واضح رہے کہ نقیب اللہ قتل کیس میں راؤ انوار سمیت دیگر گرفتار ہونے والے تمام ملزم بری ہوچکے ہیں۔

انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت نمبر 16 نقیب اللہ قتل کیس میں سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انواز، ڈی ایس پی قمر سمیت 18 افراد کو بری کرتے ہوئے کہا تھا کہ استغاثہ جرم ثابت کرنے میں ناکام رہا تھا۔