سندھ میں بدامنی اور لاقانونیت کا راج ہے: ڈاکٹر قادر مگسی

news-details

حیدرآباد: (جمعہ: 14 جولائی 2023ء) سندھ ترقي پسند پارٹی کی سینٹرل ایگزیکٹو کونسل کا اجلاس مگسی ہاؤس حیدرآباد میں سندھ ترقی پسند پارٹی کے چیئرمین ڈاکٹر قادر مگسی کی زیر صدارت منعقد ہوا۔
اجلاس میں سندھ بھر سے پارٹی کے ڈویژن اور ضلعی صدور، جنرل سیکرٹری اور پارٹی کی مرکزی مجلس عاملہ کے اراکین نے شرکت کی۔
اجلاس میں ملک اور سندھ کی سیاسی صورتحال اور تنظیمی صورتحال کا جائزہ لیا گیا اور مختلف فیصلے کیے گئے۔
اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سندھ ترقی پسند پارٹی کے چیئرمین ڈاکٹر قادر مگسی نے کہا ملک میں سیاسی اور معاشی بحرانوں کا واحد حل ملک کی تمام اکائیوں کو مساوی حقوق دینا ہے۔
حکمران عوام پر ٹیکسوں کا بوجھ ڈالنے کی بجائے عوام دوست معاشی منصوبہ بنائیں اور اپنے شاہانہ اخراجات کم کریں۔
ایک طرف مہنگائی سے غریب عوام اشیائے خوردونوش کے لیے پریشان ہیں تو دوسری طرف حکمران سرکاری اخراجات پر شاہانہ زندگی گزار رہے ہیں۔
سندھ میں بڑھتی ہوئی بھوک اور بیروزگاری کی ذمہ دار پیپلز پارٹی کی حکومت ہے جو مسلسل اقتدار میں رہتے ہوئے بھی سندھ کے عوام کو کوئی ریلیف نہیں دے سکتی۔
سندھ میں بدامنی اور لاقانونیت کا راج ہے۔
ڈاکو حکومت کو وڈیروں، سرداروں اور جاگیرداروں کی مکمل حمایت حاصل ہے۔
ڈاکو راج کی وجہ سے سندھ کے بالائی ضلع نوگو ایریا بن چکے ہیں ان ڈاکوؤں کو وہ پال رہے ہیں جو الیکشن میں ان علاقوں کی الیکشن میں پولنگ جھوٹے ٹھپہ لگا کر جیت کر آتے ہیں۔
سندھ میں منظم سازش کے ساتھ غیر ملکی آبادی کو آباد کیا گیا ہے۔ غیر ملکی آباد کاری سندھ کے اندر منشیات کی سمگلنگ اور جرائم میں ملوث ہیں۔
سندھ ترقی پسند پارٹی سندھ میں یونین کونسل کی سطح تک ترقی پسند ہاؤسز قائم کرے گی۔
یونین کونسل کی سطح پر قائم ہونے والے ترقی پسند ھائوس عوام کی مدد کے لیے کھلے رہیں گے۔
ایس ٹی پی سندھ کے مظلوم پورھيت طبقے کی نمائندہ جماعت ہے جو سندھ کے پورھیت طبقے کو اقتدار میں دیکھنا چاہتی ہے۔
اجلاس میں سندھ ترقی پسند پارٹی کے مرکزی رہنماؤں جام عبدالفتاح سمیجو، گلزار سومرو، حیدر شاہانی، حیدر ملاح، ڈاکٹر سومار منگریو، عاشق سولنگی، قادر چنا، امتیاز سمون، نثار کریو، ڈاکٹر عبدالحمید میمن، ہوت خان گاڈھی، ڈاکٹر احمد نوناری، جام شوکت ابڑو، گوتم چنا، ڈاکٹر مظہر میمن، اعجاز سندھی اور دیگر نے خطاب کیا۔