سندہ ہائی کورٹ میں شہید جان محمد مھر قاتلوں کے گرفتاری اور کچے میں ڈاکوؤں کے خلاف آپریشن کیلئے دائر درخواست پر سماعت

news-details

سکھر: (منگل:12ستمبر2023ء) سندہ ہائی کورٹ سکھر بینچ میں سینئر صحافی شہید جان محمد مھر کے قاتلوں کی گرفتاري اور کچے میں موجود ڈاکوؤں کے خلاف رینجرز اور فوج کی نگرانی میں آپریشن کیلئے سندہ ہائی کورٹ سکھر بینچ میں دائر  درخواست پر سماعت  ہوئی

سکھر پریس کلب کے نائب صدر لالا شھباز پٹھان کی جانب سے دائر درخواست پر جسٹس اقبال احمد کلھوڑو اور جسٹس ارباب علی ھکڑو نے سماعت کی.

سماعت میں دليل ديتي ہوئی بئریسٹر خان عبدالغفار خان نے کها که کندھکوٹ، گھوٹکی، شکارپور اور سکھر کے کچے کے علاقوں میں ڈاکوؤں کی محفوظ پناہگاہیں بنی ہوئی ہیں جہاں پولیس بھی نہیں جا سکتی، کچے کے علاقے پولیس کیلئے نوگو ایریاز  بنی ہوئی ہیں، شہید جان محمد مھر اور پروفیسر اجمل ساوند کے قاتلوں نے بھی کچے میں ڈاکوؤں کے پاس  پناھ لی ہوئی ہے 

بئریسٹر خان عبدالغفار خان نے کها که ڈاکوؤں نے اقلیتی برادری سے تعلق رکھنے والے ساگر کمار  سمیت کئی دیگر  افراد کو بھی تاوان کیلئے اغوا کیا ہوا ہے، دو سال قبل سکھر کے علاقے سنگرار سے اغوا ہونے والی معصوم بچی پریا کماری بھی بازیاب نہ ہوسکی ہے کچے کے علاقے میں  ایک سو سے زائد افراد کو ڈاکوؤں نے تاوان کیلئے مغوی بنایا ہوا ہے ڈاکوؤں کے خلاف پاک فوج , رینجرز اور پولیس کا مشترکہ  گرینڈ آپریشن کیا جائے، امن و امان کو قائم رکھنے کیلئے مستقل اقدامات کیئے جائیں

سندہ ہائی کورٹ سکھر بینچ نے کیبنٹ ڈویژن، وزارت دفاع، سندہ حکومت، وزارت داخلہ، آئی جی سندہ پولیس اور ڈی جی  رینجرز کو کو نوٹس جاری کرتي هوئي سماعت12 اکتوبر تک ملتوي کردی