لنڈی کوتل: مسلح افراد کی فائرنگ سے صحافی خلیل جبران جاں بحق، ایک زخمی

news-details

ایبٹ آباد: (بدھ: 19 جون 2024ء) خیبر کی تحصیل لنڈی کوتل کے علاقے مزرینہ میں فائرنگ سے خیبر ٹی وی کے صحافی خلیل جبران جاں بحق جبکہ ان کے ساتھی سجاد ایڈوکیٹ زخمی ہوگئے۔ صحافی خلیل جبران شہید کے قاتلوں کو فوری طور گرفتار کیا جائے، صوبائی حکومت صحافی خلیل جبران کے قاتلوں کو گرفتار کر کے قرار واقعی سزا دی جائے ان گرفتاری ٹھوس اقدامات اٹھائے۔

صدر ایبٹ آباد پریس کلب محمد شاہد چوہدری، جنرل سیکرٹری سردار شفیق احمد، صدر  یونین آف جرنلسٹس ثاقب خان، جنرل سیکرٹری عاطف قیوم ،سابق صدرو پریس کلب سردار نوید عالم، راجہ محمد ہارون، محمد عامر شہزاد جدون  و دیگر عہدیداران، ممبران نے اپنے مشترکہ بیان میں کیا ہے انہوں نے کہا کہ  لنڈی کوتل پریس کلب کے سابق صدر وخیبر نیوز کے نمائندہ خلیل جبران کے قتل کی شدید الفاظ میں مذمت کی اور واقعے کو انتہائی بزدالانہ فعل قرار دے دیا۔

 انہوں نے کہا کہ ہمارے صوبے اور ملک کے صحافیوں کو انتہائی مشکل حالات کا سامنا کرنا پڑا رہا ہے ۔ایسے مشکل حالات میں بھی خلیل جبران جیسے صحافی اپنے فرائض پوری ایمانداری کیساتھ انجام دے رہے تھے اور وہ اپنے علاقے کے لوگوں کی ایک توانا آواز تھے۔ مگر افسوس کہ وفاقی و صوبائی حکومت کی طرف سے صحافیوں اور خصوصاً قبائلی صحافیوں کے حقوق اور انکی حفاظت کے لئے کوئی اقدامات نہیں اٹھائے جارہے ہیں انہوں نے  اس حوالے سے حکومتی اداروں  اور اقدامات پر افسوس ہے اور یہ انتہائی نا کافی ہیں  بلکہ نہ ہونے کے برابر ہیں۔شہید  خلیل جبران کے قاتلوں کو فی الفور گرفتار کیا جائے اور ان کی گرفتار کر کے سخت  سے سخت  سزا دی جائے  صحافیوں کے تحفظ کو یقینی بنایا بنایا جائے۔تاکہ خلیل جبران کی طرح مزید جنازے ہمیں نہ اٹھانے پڑیں۔

اس موقع ایبٹ آباد پریس کلب  و یونین آف جرنلسٹس کے عہدیداران و ممبران نے کہا ہے کہ ہم متاثرہ خاندان کے غم میں برابر کی شریک ہیں اور اللہ تبارک و تعالیٰ مرحوم خلیل جبران کو جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا فرمائے اور پسماندگان کو صبر جمیل عطا کرے آمین۔